پاکستا ن

اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ پاک فوج کے سابق آرمی چیف جنرل ( ر ) جنرل راحیل شریف کی وزیراعظم عمران خان سےاہم ملاقات

جنرل راحیل شریف

اسلام آباد(سچ بول چال SBC ) اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ ( ر ) جنرل راحیل شریف نے; وزیراعظم ہاؤس اسلام آباد میں وزیراعظم پاکستان سے ملاقات کی; ملاقات میں جنرل راحیل شریف نے اسلامی اتحادی فوج کے اغراض و مقاصد دہشت گردی کے خلاف اقدامات پر بات چیت کے علاوہ; باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

دفتر خارجہ پاکستان

 ( ر ) جنرل راحیل شریف نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی سے بھی ملاقات کی;اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ دفتر خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق; سعودی عرب سے تعلق رکھنے والی سلامی فوجی انسداد دہشت گردی اتحاد کے سربراہ ( ر ) جنرل راحیل شریف نے; وزارت خارجہ میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی اور وزیر خارجہ کو دہشت گردی کے خلاف فوجی اتحاد کے اقدامات سے آگاہ کیا۔

 وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے علاقائی امن و سلامتی کے لئے اسلامی فوجی اتحاد کی کوششوں کو سراہا; ملاقات کے دوران علاقائی امن وامان کی اہمیت اور دیگر باہمی دلچسپی کے امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ;بعدازاں جنرل راحیل شریف نے سینیٹ کے چیئرمین صادق سنجرانی سے ملاقات کی اور بین الاقوامی امور پر گفتگو کی گئی; اس ملاقات میں اراکین سینیٹ اور اسلامی فوجی اتحاد   وفد  کے اراکین بھی شامل  تھے۔

 چیئرمین سینیٹ

اس موقع پر چیئرمین سینیٹ میں کہا کہ اسلامی فوجی اتحاد دہشت گردی کے خلاف ایک مربوط پلیٹ فارم ہے; انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی میں بہت نقصان اٹھایا ہے; پاکستانی افواج دیگر اداروں اور عوام نے مل کر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑی  اور کامیابی حاصل کی۔ چیئرمین سینیٹ کا کہنا تھا کہ ;پاکستان کبھی نہیں چاہتا کہ کوئی بھی ملک اس طرح کی صورتحال سے دو چار ہو     ;یہ اتحاد کسی خاص ریاست یا قوم کے خلاف نہیں; دہشت گردی کے خلاف جاری کوششوں کو مزید منظم بنانے کے لئے ہے ; اس اتحاد سے مسلم ممالک کے علاوہ دیگر ممالک بھی فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

 صادق سنجرانی نے کہا کہ; ہمارے لیےباعث خوشی ہے کہ اس فوجی اتحاد کی قیادت پاکستان کے ( ر ) جنرل راحیل شریف کر رہے ہیں; پاکستان خطے کی ترقی و خوشحالی کے لیے مسائل کا حل چاہتا ہے کیونکہ امن ترقی کی ضمانت ہے; اور مذاکرات ہی مسائل کا حل ہیں ۔

سابق چیف آف آرمی سٹاف ( ر ) جنرل راحیل شریف

 ملاقات کے دوران ( ر ) جنرل راحیل شریف نے کہا کہ ;اسلامی فوجی اتحاد نہ صرف خطے بلکہ دنیا بھر میں دہشت گردی کے خاتمے اور قیام امن کے لیے جاری کوششوں کو مربوط بنائے گا۔

 واضح رہے کہ اسلامی فوجی اتحاد کا قیام 15 دسمبر 2015 کو عمل میں آیا تھا ;ابتدائی طور پر اس میں 34 ممالک شریک تھے ;جس کی تعداد اب 41 تک پہنچ گئی ہے; اس اتحاد کے سربرا ہ  پاکستان کے سابق چیف آف آرمی سٹاف ( ر ) جنرل راحیل شریف ہیں۔ ( ر ) جنرل راحیل شریف سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے قریبی تصور کیے جاتے ہیں; سعودی ولی عہد کے دورہ    پاکستان   سے قبل دو روزہ دورے پر اتوار کو اسلام آباد آئے تھے۔

ضعیف العمر خاتون کا زندگی کی آخری سانسوں میں قبول اسلام ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top