اہم خبریں

بنگالیوں اور افغانیوں کو شہریت دینے کے وزیراعظم عمران خان کے اعلان پر قومی اسمبلی میں نئی بحث چھڑ گئی

akhtar-mengal

akhtar-mengal


پاکستان میں پیدا ہونے والے بنگالیوں اور افغانیوں کو شہریت دینے کے وزیراعظم عمران خان کے اعلان پر قومی اسمبلی میں حکومتی اور اتحادی جماعتوں کو شدید تنقید کا سامنا قومی اسمبلی میں نئی بحث چھڑ گئی


اسلام آباد(سچ بول چال Urdu news) بی این پی “بلوچستان نیشنل پارٹی”; کے صدر اختر مینگل نے کہا کہ حکومت پاکستان علاان کر دے  پاکستان ;عالمی یتیم خانہ; ہے. بلوچ عوام کو ان کے اپنے ملک میں بھی انسان نہیں سمجھا جاتا. پاکستان پیپلز پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کی طرف سے پناہ گزینوں کو شہریت دینے کے حوالے پر توجہ دلاؤ نوٹس قومی اسمبلی میں جمع کرایا گیا.

 پی پی پی کی نفیسہ شاہ نے “وزیراعظم عمران خان ” کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ; وزیراعظم نے کراچی کی عوام کے جذبات مجروح کر تے ہوئے بیان دیا ہے. انہوں نے کہا کہ ;وزیراعظم; کا یہ بیان شہر قائد کی حساسیت کو جانے بغیر دیا گیا ہے جہاں وسائل پر کئی بار خانہ جنگی دیکھنے میں آئی ہے.

پاکستان پیپلز پارٹی

 نفیسہ شاہ نے کہا کہ ”عمران خان” ;مدینہ جیسی فلاحی ریاست کرتے ہیں شاید انہیں یہ معلوم نہیں کہ کئی سالوں سے سعودی عربیہ میں مقیم; پاکستانیوں ;مہاجرین کو آج تک شہریت نہیں مل سکی. انہوں نے مطالبہ کیا کہ کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے حکومت کو ملک میں رہنے والے پناہ گزینوں کی معلومات کو اکٹھا کرنا چاہیے ;پاکستان پیپلز پارٹی; کی رہنما سابق وزیر خارجہ حنا ربانی کھر میں ”وزیراعظم عمران” خان کے بیان پر تنقید کرتے ہوئے اسے غیر ذمہ دارانہ قرار دیا ہے. حنا ربانی کھر نے کہا کہ ;”عمران خان”; کو معلوم ہونا چاہیے کہ وہ وزیر اعظم بننے کے بعد اپنی جماعت کے نہیں بلکہ کے پورے پاکستان کی نمائندگی کر رہے ہیں . حساس معاملات پر وزیراعظم کے طور پر یوٹرن نہیں لے سکتے .پارٹی سربراہ کے طور پر یوٹرن لے سکتے ہیں.

یہ بھی پڑھیں : بھارتی قیادت بصیرت سے عاری ،بھارت کا منفی رویہ قابل افسوس ہے ؛وزیراعظم عمران خان

 بی این پی مینگل کے ;اختر مینگل; نے اس معاملے کو قومی اسمبلی میں ایوان میں بحث کرنے کا مطالبہ کیا . ان کا کہنا تھا کہ ہم یوٹرن کے جھنجھٹ میں نہیں پڑتے، ڈالر لے کر جن کو واپس بھیجا جاتا ہے وہ چیک پوسٹ پر; ;500 روپے دے کر واپس آ جاتے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت اعلان کردے کہ ;پاکستان علمی یتیم خانہ ;ہے.

 شیریں مزاری

پاکستان تحریک انصاف کی رہنما;’شیریں مزاری; نے پیپلز پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی کی جانب سے اعتراضات پر جواب دیتے ہوئے کہا کہ، کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے ;حکومت ;اس معاملے پر بحث کرنے پر تیار ہے . وزیراعظم; نے اختر مینگل سے ملاقات کے دوران یقین دہانی کرائی تھی کہ فیصلہ سے قبل تمام جماعتوں سے;;;;  مشاورت کی جائے گی اور انہیں عتماد میں لیا جائے گا. انہوں نے کہا کہ ;”تحریک انصاف”; کی حکومت اس حوالے; سے معلومات اکٹھی کر رہی ہے. جسے جلدہی; پارلیمنٹ ;میں پیش کردیا جائے گا. انہوں نے; نفیسہ شاہ ;کے بیان کے حوالہ سے کہا کہ ;،سعودی عرب ;مدینہ کی اس ریاست کی نمائندگی نہیں کرتی جس کے بارے میں عمران خان نے بیان دیا ہے.

 شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ شہریت ایکٹ ;”1951”; پاکستان میں پیدا ہونے والے تمام افراد کو شہریت دینے کا کہتی ہے. ان کا کہنا تھا کہ پناہ گزینوں کو; جبری ;طور پر ملک سے باہر نہیں کیا جا سکتا .اور بنگالیوں کو بنگلہ دیش میں بھی شہریت حاصل نہیں ہو گی کیونکہ انہوں نے ;پاکستان ;کی اندر رہنے کو ترجیح دی تھی .آپ کو یہ بات پسند آئے یا نہ آئے لیکن; پاکستان; کا قانون پاکستان میں پیدا ہونے والے افراد کو شہریت دینے کا کہتا ہے، اور ایوان اس قانون کو تبدیل بھی کر سکتا ہے.

سچ بول چال تازہ خبریں Urdu news


Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top