رحیم یار خان

رحیم یار خان ریٹرننگ آفیسر کے دفتر پر حملہ پاک فوج کے خلاف نعرے بازی میاں امتیاز کے ساتھ کیا ہونے والا ہے

ryk urdu news

رحیم یارخان (سچ بول چال آن لائن) ریٹرننگ آفیسر کے دفتر پر حملہ پاک فوج کے خلاف نعرے بازی میاں امتیاز کے ساتھ کیا ہونے والا ہے25 جولائی کو عدلیہ پر حملے; پاک فوج اور الیکشن کمیشن کے خلاف نعرے بازی کرنے والے; ایم این اے کے امیدوار میاں امتیاز; ایم پی اے کے امیدوار عمر جعفر; چیئرمین میونسپل کمیٹی میں اعجازعامر سابق; ڈپٹی سپیکر جعفر اقبال گجر و کارکنان سمیت 156 افراد پر درج دہشت گردی کے مقدمے میں مرکزی ملزم ;میاں امتیاز عدالت سے عبوری ضمانت; کرواتے ہوئے مقدمہ میں شامل تفتیش ہو گئے۔

پولیس نے ملزمان کو شامل تفتیش کرتے ہوئے ;دہشتگردی سمیت دیگر سنگین دفعات ;کے مقدمے کی کاروائی شروع کر دی مدعی مقدمہ آراو افسر ایڈیشنل سیشن جج کے بیان قلمبند۔

میاں امتیاز

تفصیلات کے مطابق: 25 جولائی کو جنرل الیکشن کے پولنگ بند ہونے کے بعد;نتائج میں دیر پر مسلم لیگ نون کے ایم این اے کے امیدوار میاں امتیاز; ایم پی اے کے امیدوار عمر جعفر; چیئرمین میونسپل کمیٹی میا ں اعجازعامر; سابق ڈپٹی سپیکر جعفر اقبال گجر ;سمیت دیگر کارکنان نے آراوفیسر ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت پر حملہ آور ہوکر معزز جج کوتشددکا نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی; اور عدالت کے اندر توڑ پھوڑ کرتے ہوئے پاک فوج کے خلاف نازیبا نعرے بازی کی تھی۔

ایڈیشنل سیشن جج کی مدعیت میں لیگی امیدواروں وکارکنان پر; سنگین دفعات; سمیت دہشت گردی کا مقدمہ تھانہ سیٹی اے ڈویثرن میں درج کیا گیا تھا; جس پر لیگی امیدواران تمام ساتھیوں کے ہمراہ منظرعام سے غائب ہو گئے تھے;گزشتہ روز انسداد دہشتگردی کورٹ سے ملزمان نےعبوری ضمانت حاصل کی اور ڈی پی او رحیم یار خان اطہر وحید کے روبرو پیش ہوکر; دہشت گردی کے مقدمہ میں شامل تفتیش ہوگئے ;ملزمان کے مقدمہ میں شامل تفتیش ہونے کے بعد کاروائی شروع کردی گئی ہے جس کے لیے تفتیشی افسرنے ;مدعی ایڈیشنل سیشن جج; کے بیان قلمبند کر لئے۔

سچ بول چال آن لائن ryk urdu news



Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top