پاکستا ن

آئی جی اسلام آباد پیش کیوں نہیں ہوئے، آئی جی پیش ہوکرحلف نامہ جمع کرائیں،یہ شہری2015 سے لاپتا ہے

Highcourt-Islamabad-image
آئی جی اسلام آباد پیش کیوں نہیں ہوئے، آئی جی پیش ہوکرحلف نامہ جمع کرائیں،یہ شہری2015 سے لاپتا ہے

اسلام آباد (ویب ڈیسک )پاکستانی شہری عبداللہ عمرکی بازیابی درخواست کی سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے جج جسٹس محسن اختر کیانی نے کی ایس ایس پی ز بیرہاشمی عدالت میں پیش ہوئے اور بتایا کہ لاپتہ عمر عبداللہ ہماری حراست میں نہیں ہے ،وزارت دفاع کے آفیسر خالد عباس ،ڈی ایس پی لیگل اظہر شاہ بھی عدالت میں پیش ہوئے ۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے استفسار کیا کہ آئی جی اسلام آباد کیوں پیش نہیں ہوئے ؟جبکہ درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ عبداللہ عمر 2015 سے لاپتا ہے اور ابھی تک بازیاب نہیں ہو سکا ،ایس ایس پی زبیر ہاشمی نے کہا کہ ڈی آئی جی صاحب مصروفیات کی وجہ سے پیش نہیں ہو سکے۔
فاضل جج نے ریمارکس دیےش کہ متعلقہ، ایس ایچ او،نے بیان حلفی میں کہاں ہے کہ عمر عبداللہ حساس ادارے کی تحویل میں ہے ،یہ کیس لاپتہ ،کانہیں بلکہ اغوا کا ہے، سب کو معلوم ہے کہ، عبداللہ عمر ،کوکس نے اغوا کیا ہے عدالت نے قرار دیا کہ آئی جی اسلام آباد حلف نامہ جمع کرائیں ،کہ وہ حساس ادارے کے سربراہ سےتفتیش کارسکتے ہیں یا نہیں ۔عدالت نے کیس کی سماعت، 17 جولائی ،تک ملتوی کر دی۔

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top