رحیم یار خان

نہروں کی بندش پر کاشت کار سراپہ احتجاج

ahtjaj

رحیم یار خان( نیوزڈیسک) نہروں کی بندش اور پانی کی قلت کےباعث کاشتکارسراپا احتجاج مظاہرین نےشہر بھر کی مختلف شاہراہیں بلاک دیں، احتجاج کے باعث مختلف مقامات پر ٹریفک بلاک مظاہرین نے 3 گھنٹے احتجاج کیا، ڈپٹی کمیشنر آفس کا گیٹ توڑنے کی بھی کوشش کی، مشتعل مظاہرین نے ڈی سی جمیل احمد جمیل سے مذاکرات کرنے کا مطالبہ کیا جس پر اسسٹنٹ کمشنر رحیم یارخان موقع پر پہنچے تو مظاہرین نے مذاکرات کرنے سے انکار کردیا ۔
تفصیل کے مطابق محکمہ انہار کی جانب سے لکھی مائنر اور کلن مائنر سات ماہ سے پانی کی عدم فراہمی کے خلاف سینکڑوں کاشتکاروں کیا ڈی سی آفس، اڈا خانپور ٹائر جلا کر سڑکیں بند کرنے کے بعد احتجاج ،ڈی سی آفسکا گھراو عملہ دفتروں میں محصور ہو کر رہ گیا، مکمہ انامر کے اعلی افسران پر نہروں کے منظور شدہ پانی بااثرزمندکاروں کو فروخت کرنے کا الزام، نہری پانی کی عدم فراہمی کے باعث سینکڑوں ایکڑ اراضی بنجربن گئی ۔
زمینداروں نے ڈی سی او آفس کے گیٹ کے باہر احتجاجی دھرنا دیا مشتعل زمینداروں نےآفس میں گھسنے کی کوشش کی جنہیں آفس سیکیورٹی عملہ نےدفتر میں داخل ہونے سے روکے رکھا اس موقع پر متاثرہ کاشتکاروں نے احتجاج کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ محکمہ انہار نے نہروں کا منظورشدہ بااثرزمندواروں کو فروخت کر دیا ہے جس کے نتیجے میں ان کی کروڑوں روپے مالیت کی زرعی اراضی مکمل طورپر بنجر ہو چکی ہے ،پانی کی عدم فراہمی کے باعث ان کے لاکھوں روپے مالیت کے مویشی لقمہ اجل بن چکے ہیں۔
تاہم ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے کہاہے کے نہری پانی کی غیر منصفانہ تقسیم کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، نہری پانی کی عدم دستیابی سے تمام صورتحال بارے کاشتکاروں کو آگاہ کیا جائےاور پانی وارابندی بارے بھی اعتماد میں لیا جائے۔
 

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

To Top